بین الاقوامی

چینی وزارت دفاع کی ڈچ بحریہ کے جنگی جہازوں پر مبنی ہیلی کاپٹروں کی اشتعال انگیزی کی مذمت


بیجنگ:چینی وزارت خارجہ کی پریس کانفرنس میں نامہ نگار نے سوال کیا کہ نیدرلینڈز کی وزارت قومی دفاع کی ویب سائٹ پر شائع ہونے والے ایک حالیہ مضمون کے مطابق دو چینی لڑاکا طیارے اور ایک چینی ہیلی کاپٹر مشرقی بحیرہ چین کے اوپر بین الاقوامی فضائی حدود میں ڈچ نیوی فریگیٹ ٹرمپ کے کیریئر بیسڈ ہیلی کاپٹر کے قریب پہنچے جس سے عدم تحفظ پیدا ہوا۔

یہ جہاز شمالی کوریا کے خلاف اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی پابندیوں کی قرارداد کی نگرانی کے مشن پر تھا۔ کیا آپ اس پر کوئی تبصرہ کریں گے؟ وزارت قومی دفاع کے ترجمان جانگ شیاؤ گانگ نے کہا کہ ڈچ فریق نے جو کچھ کہا وہ جھوٹا بیان ہے جو حقیقت کے خلاف ہے۔ 7 جون کو ، ڈچ بحریہ کے فریگیٹ “ٹرمپ” نے شنگھائی کے مشرق میں اشتعال انگیز کاروائی کی ، اور چینی پیپلز لبریشن آرمی کے مشرقی تھیٹر نے اسے صوتی انتباہ دیا اور لڑاکا طیارے کا ٹیک آف اپنایا ۔ ہالینڈ نے اقوام متحدہ کے مشن کو انجام دینے کا جھوٹا دعویٰ کیا اور دوسرے ملک کے دائرہ اختیار میں سمندری اور فضائی حدود میں اپنی فوجی طاقت کا مظاہرہ کیا ، جس سے کشیدگی پیدا ہوئی اور دونوں ممالک کے مابین دوستانہ تعلقات کو نقصان پہنچا۔
ہم ڈچ فریق کے الفاظ اور اعمال کی گھناؤنی نوعیت کی سخت مذمت کرتے ہیں، اور ان کے ساتھ سنجیدہ تحفظات کا اظہار کرتے ہیں. ہم ہالینڈ کو متنبہ کرتے ہیں کہ وہ بحری اور فضائی افواج کی کارروائیوں کو سختی سے کنٹرول کرے ،کسی بھی اشتعال انگیزی کا چینی فریق کی طرف سے سختی سے مقابلہ کیا جائے گا. چین کی مسلح افواج ہمیشہ چوکس رہتی ہیں اور چین اپنی قومی خودمختاری، سلامتی اور بحری حقوق اور مفادات کا بھرپور دفاع کرتی رہےگی ۔

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker